رمضان-المبارک-2024

Share This Story, Choose Your Platform!

رحمتوں اوربرکتوں کا مہینہ،رمضان المبارک 2024

رمضان کا چاند جب آسمان کی زینت بنتا ہے تو پوری مسلم دنیا پر ایک سکوت طاری ہو جاتا ہے۔ اسلامی کیلنڈر کا نواں مہینہ رمضان، اپنے ساتھ بے پنا روحانی اہمیت کا موسم لے کر آتا ہے۔ یہ خود شناسی،عبادت اور ایمان کا وقت ہے۔

قرآن مجید خود سورة البقرة، آیت 185 میں رمضان کی اہمیت بتاتا ہے: “رمضان وہ مہینہ ہے جس میں قرآن نازل کیا گیا، ہدایت کے طور پر لوگوں کے لیے اور واضح نشانیاں ہدایت اور انصاف کی۔” (قرآن 2:185)

یہ آیت رمضان کے مقصد کی وضاحت کرتی ہے: قرآن مجید کے اندر موجود الہیٰی پیغام سے جڑنا۔ یہ مسلمانوں کے لیے ایک مہینہ ہے کہ وہ اس کتاب میں غور کریں، اسے نئے جوش کے ساتھ پڑھیں اور اس کی حکمت کو اپنے اعمال اور خیالات کی رہنمائی کرنے دیں۔

رمضان کا سب سے نمایاں پہلو روزہ رکھنا ہے۔ مسلمان، سحر سے لے کر مغرب تک، کھانے پینے اور تمام غیر اخلاقی سرگرمیوں سے دور رہتے ہیں۔ یہ عمل، جیسا کہ حضرت محمد ﷺ کی حدیث میں بیان کیا گیا ہے جو صحیح بخاری میں موجود ہے، اسلام کے پانچ ارکان میں سے ایک ہے۔ رمضان میں روزہ رکھنا صرف جسمانی پابندی سے بڑھ کر ہے۔ یہ ضرورت مند لوگوں کے لیے ہمدردی پیدا کرنے، خود نظم و ضبط پیدا کرنے اور اللہ تعالیٰ کے ساتھ اپنے تعلق کو مضبوط بنانے کا ذریعہ ہے۔ رمضان عبادت کے معمول کو بڑھانے کا مہینہ ہے۔

مسلمان زیادہ توجہ کے ساتھ اپنی روزمرہ کی نمازوں کی ادائیگی کی کوشش کرتے ہیں اور تراویح کی نمازوں میں شرکت کرتے ہیں، جو خصوصی رات کی نمازیں ہیں جو صرف رمضان میں پڑھی جاتی ہیں۔ یہ مہینہ قرآن کی زیادہ سے زیادہ تلاوت کا ایک سنہری موقع بھی فراہم کرتا ہے۔ بہت سے مسلمان رمضان کے اختتام تک پوری قرآن پاک کی ایک ختم تلاوت کا ہدف رکھتے ہیں، اس عمل کو ختم القرآن کہتے ہیں۔

رمضان میں زکوٰة، جو کہ فرض ہے، پر اور بھی زیادہ زور دیا جاتا ہے۔ مسلمانوں کو ضرورت مندوں کی مدد کرنے کی ترغیب دی جاتی ہے، خاص طور پر یہ یقینی بنانے کے لیے کہ ہر کوئی رمضان المبارک کے اختتام پر عید الفطر، خوشیوں سے بھرپور تہوار، منا سکے۔

حضرت محمد ﷺ نے فرمایا، “سب سے بہتر صدقہ وہ ہے جو رمضان میں دیا جائے” (ابن ماجہ)۔ خیرات پر یہ زور رمضان کی روح کو ظاہر کرتا ہے: رحم، سخاوت اور ضرورت مند لوگوں کی مدد کا وقت۔ رمضان کے آخری دس دنوں کی خاص اہمیت ہے۔ یہ وہ وقت ہے جب قرآن مجید حضرت محمد ﷺ پر نازل ہوا تھا۔ مسلمان ان راتوں میں اپنی عبادت کو بڑھا دیتے ہیں، بہت سے لوگ اعتکاف کرتے ہیں، جو کہ مسجد میں عبادت اور غور و فکر میں گزارا گیا وقت ہے۔

یہ مہینہ روحانی ترقی، خود نظم و ضبط اور اللہ تعالیٰ کے ساتھ گہرے تعلق کے لیے ایک محرک کا کام کرتا ہے۔

رمضان مسلمانوں کے لیے ایک تحفہ ہے، اپنے ایمان سے دوبارہ جڑنے، اپنے  ایمانوں کو مضبوط بنانے اور اپنے آپ کو بہتر بنانے کا وقت ہے۔ جب ہم اس مقدس مہینے کا خیر مقدم کرتے ہیں، تو آئیے اسے کھلے دلوں اور روحانی ترقی کے عہد کے ساتھ قبول کریں۔

بھر دنیا کے مسلمان بے حد شوق سے رمضان کے آنے کا انتظار کرتے ہیں، جو کہ اسلامی قمری کیلنڈر کا نواں مہینہ ہے۔ اس برکت والے مہینے کی بے پنا اہمیت ہے۔

شبِ قدر

رمضان کے آخری عشرے میں اسلام کی ایک نہایت مقدس رات آتی ہے، جسے لیلۃ القدر یا شبِ قدر کہتے ہیں۔ قرآن اس رات کو ہزار مہینوں سے بھی بہتر قرار دیتا ہے (سورہ القدر، آیت 3)۔ مسلمان اس رات میں اللہ تعالیٰ سے بخشش اور رحمت طلب کرنے کے لیے دعاؤں اور عبادت میں شب بیداری کی کوشش کرتے ہیں۔ 

سحری اور عید الفطر

ہر شام افطار، ایک خوشی کا موقع ہوتا ہے جہاں خاندان اور کمیونٹی کے لوگ اکٹھے ہو کر کھانا کھاتے ہیں اور اپنی روحانی ترقی کا جشن مناتے ہیں۔ رمضان کا اختتام عید الفطر کے خوشیوں سے بھرپور تہوار پر ہوتا ہے، یہ وہ دن ہے جس میں نمازیں، دعوتیں، عیدی دینا اور اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرنا شامل ہے۔

:اس رمضان میں

قرآن کی سمجھ کو گہرا کرنے پر توجہ دیں۔

اپنی نمازوں اور دعاؤں میں اضافہ کریں۔

ضرورت مندوں کے ساتھ ہمدردی اور سخاوت کا مظاہرہ کریں۔

اپنے اعمال پر غور کریں اور خود کو بہتر بنانے کی کوشش کریں۔

یہ رمضان تمام مسلمانوں کے لیے بے پنا برکتوں اور روحانی ترقی کا وقت ہو۔

About the Author: Parsa Ehsan

Parsa Ehsan is an MPhill Scholar pursuing her degree in Clinical Psychology .She has been the part of many Youth Organizations and conferences at both sectors (private & government) and climate change promotor. She has been writing content for multiple organizations since 4 years. Furthermore, she worked in different small grant community projects .She has been a part of German Red Cross as climate champion and was youth representative in  youth parliament Ajk. She also served as First Aid Responder's team leader in Pakistan Red Crescent Society, Ajk state branch.She is also an English Works alumuna a program sponsored by US Embassy, Islamabad and currently serving in the leadership of Ajk North chapter as Exchange Ambassador. Her goal is to grow by getting different learning opportunities and to help the community in growing.

Leave A Comment

continue reading

Related Posts

  • 3.1 min readPublished On: April 16, 2024
    Read More
  • 5 min readPublished On: April 15, 2024
    Read More
  • 2.9 min readPublished On: April 10, 2024
    Read More